Home / اردو خبریں / جمہوری نظام کے لیے بظاہرخطرے کی گھنٹی

جمہوری نظام کے لیے بظاہرخطرے کی گھنٹی

غیر جمہوری قوتیں جمہوری نظام کے خلاف سرگرم ہوچکی ہیں، سینیٹر ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ

پاکستان کی سپریم کورٹ میں متنازع میمو کے بارے میں حکومت اور فوجی قیادت کے متضاد موقف کے بعد حکومت اور حزبِ مخالف کے بعض سیاستدان کہتے ہیں کہ یہ جمہوری نظام کے لیے بظاہر خطرے کی گھنٹی ہے۔

حزبِ مخالف کی جماعت نیشنل پارٹی کے صدر اور بلوچستان کے سینیٹر ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ کہتے ہیں’غیر جمہوری قوتیں اور سیکورٹی اسٹیبلشمینٹ جمہوری نظام کے خلاف سرگرم ہوچکی ہیں۔ میمو کی وجہ سے یہ جو نظام ہے اسے لپیٹنے کی کوشش کریں گے۔ میں پھر آپ کے توسط سے تمام سیاسی جماعتوں سے یہ کہتا ہوں کہ وہ اس معاملے پر متحد ہوجائیں کہ اس نظام کو چلنا چاہیے۔‘

حزبِ مخالف کی ایک اور پارٹی جماعتِ اسلامی کے نائب امیر سینیٹر پروفیسر خورشید احمد کہتے ہیں کہ معاملہ بہت تشویشناک تو ہے لیکن میمو کی آڑ میں جمہوری نظام کو متاثر نہیں ہونا چاہیے۔

Comments

comments

About Saeed Nauman

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

Scroll To Top